The birth of burial and human poisoning in four morals ………………………

Humans poisons and type of humans body poisons



PLEASE Note this post is translated by google translator from urdu to English if you dont understand it then copy the urdu text and translate it to any others way.
THANK you

It is important to know that some poisons originate from deformation and deformation in human organs. Which may be due to the variation in the organs of the organ and the transformation of the physical functions. The first to discover and characterize these poisons was invented by the inventor of homeopathy Dr. Christian Samuel Hannemann. They discovered human poisoning.

All four motions of the blood are interconnected, and the presumption of one defect can cause the other to become infected. These morals do not lie in a separate vessel, but are mixed together in the blood.

When a malfunction is developing in the body and some amount of it is left to feed the related organs, it starts to store in the body's cells and caves. Then a chiffon begins to form. If the mucus is freezing it produces poisonous poison.

The mucus secretes the mucus in the body's direction, and lymph nodes are absorbed by the body and the mucus is removed. And it produces inflammation in the connective tissue, thus the nerve conduction automatically turns into cardiac inflammation.

Humans poisons and type of humans body poisons



In order to eliminate the bargaining, nature accelerates the body's functioning of the heart and muscles. In this way, the dryness of the body and the spleen are gone. Rhea tries to wipe out the dryness of her bargain. If she cannot, she becomes self-inflicted and causes poisoning.

The nature of hemorrhoids poisoning seeks to eradicate the body through purification and stimulates the function of liver and abdominal organs and stimulates the excretory system. But if nature fails to completely exclude bovine poisoning, the inflammatory effects of bovine poisoning cause a deterioration in the functions and structures of the liver and gastrointestinal tract.


Humans poisons and type of humans body poisons


It was just a matter of watching this same picture of morality in an organic context…
Mucinous mucus produces inflammation of the nerves (of all organs) when absorbed into nerve tissues.
These toxins are absorbed by the lymphatic nodes and infect the entire lymphatic system. During this time, the secretion of connective tissue begins to creep and glands under the venom poisoning become messengers.
Now the disease begins to infect the connective tissue (connective tissue). Muscle spasm is caused by inflammation in the body, causing inflammation in the muscle, and inflammation of the esophagus begins to produce poisoning.
 Nature stimulates the liver and gastrointestinal tract to produce inflammation of the heart and lungs. It is important to remember that when blood circulates in the liver and gastrointestinal tract, their respective defects also cause toxic effects in the bloodstream. And Safaria begins to turn into Suzuki poison.

The process of poisoning the morality of the mind runs in a circle that can start from anywhere. And nature can end up there under the influence of the kindred body. The process of the birth of poison begins at the point where it is completely free. Then the poisoning and poisoning process continues until the end of life or healing. It can start with phlegm - or bargains or whatever. But the order of the move is in line with the natural seasons.

Treatment for poisoning ...

Nowadays it is very easy to diagnose the poison with the symptoms as well as the laboratory tests.
Million of every temperament to eradicate poisons. The issues and theories are set out in the text Wednesday.

Principle Remedies - ...
Remove the poisonous matter from the million and inactive drugs that drive the mechanical organ of the organ in which the toxin is being made. The mechanical movement of any organ is even stronger than that of the next organ, thus the strength of the muscular organ begins to increase.
Also predict the chemical movement of the next narcotic organ.
In the meantime, if the therapist sees a life-threatening weakness in the fractured organs, the treatment may also stimulate the organs under treatment.
But the poisonous eradication treatment is usually completed. For this reason, even the best try to complete the basic treatment first and strengthen the weak organs later ...


URDU

اخلاط اربعہ میں تعفن اور انسانی زہروں کی
پیدائش۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

جاننا چاہیئے کہ انسانی اخلاط و اعضاء میں تعفن و بگاڑ سے کچھ زہریں جنم لیتی ہیں۔ جو انسانی اعضاء میں تفرق اتصال اور طبعی افعال کے ابطال کا موجب بن سکتی ہیں۔ سب سے پہلے ان زہروں کی دریافت اور تخصیص کا کام موجد ھومیوپیتھی ڈاکٹر کرسچیئن سیموئیل ہانیمین نے کیا۔ انہوں نے تیں انسانی زہروں کی دریافت کی۔

خون کی چاروں اخلاط باہم ملی جلی ہوتی ہیں اور ایک خلط کا تعفن دوسری خلط کو بھی متعفن کرنے کا باعث بن سکتا ہے۔ یہ اخلاط کسی الگ الگ برتن میں پڑی نہیں ہوتیں بلکہ خون کے اندر باہم خلط ملط یعنی ملی جلی ہوتی ہیں۔

جب کوئی خلط بدن میں وافر پیدا ہورہی ہو اور اس کی کچھ مقدار متعلقہ اعضاء کی خوراک بننے سے بچ جائے تو وہ بدن کی خلاوں اور جوفوں میں سٹور ہونے لگتی ہے۔ پھر اس میں تعفن پیدا ہونے لگتا ہے۔  اگر بلغم متعفن ہوتو اس میں آتشکی زہر پیدا ہوتا ہے۔

بلغم کی متعفن رطوبات کو طبیعت مدبرہ بدن کی ھدایت پر لمفیٹک غدد جذب کرتے ہیں اور اس بلغم کا تعفن سوداء دور کردیتا ہے اگر بلغم کا تعفن اتنا زیادہ ہو کہ سوداء ناکام ہوجائے تب سوداء خود متعفن ہوکر خنازیری زہر پیدا کرنے لگتا ہے۔ اور یہ مخرش سوداء کنکٹو ٹشوز میں سوزش پیدا کردیتا ہے یوں اعصابی تحریک خود بخود مخاطی سوزش میں بدل جاتی ہے۔

سوداء کے تعفن کو ختم کرنے کیلیئے طبیعت مدبرہ بدن قلب و عضلات کا فعل تیز کرتی ہے۔ اور اسطرح بدن میں خشکی اور ریح کا دور دورہ ہوجاتا ہے۔  ریح اپنی خشکی سے سوداء کے تعفن کو ختم کرنے کی کوشش کرتی ہے۔ اگر  نہ کرسکے تو وہ خود بھی متعفن ہوکر بواسیری زہر پیدا کرنے کا باعث بن جاتی ہے۔

بواسیری زہر کو طبیعت مدبرہ بدن صفراء کے زریعے ختم کرنے کی کوشش کرتی ہے اور جگر و غدد ناقلہ کا فعل تیز کر کے بواسیری زہر کو بدن سے خارج کرنے کا نظام متحرک کردیتی ہے۔  لیکن اگر طبیعت بواسیری زہر کے مکمل اخراج میں ناکام ہوتو بواسیری زہر کے سوزشی اثرات سے جگر و غدد ناقلہ کے افعال و ساختوں میں بگاڑ پیدا ہوتا ہے اور وہاں خلط صفراء میں بگاڑ و تعفن پیدا ہوکر سوزاکی زہر بننے لگتا ہے۔

یہ تو حال تھا اخلاط کا اسی پکچر کو اب عضویاتی تناظر میں دیکھیں۔۔۔۔۔
متعفن بلغمی مادے جب اعصابی ٹشوز میں جذب ہوتے ہیں تو (تمام اعضاء کے)  اعصاب میں سوزش پیدا کردیتے ہیں۔ 
یہ زہریلے مواد لمفیٹک نوڈز سے جذب ہوکر پورے لمفیٹک سسٹم و غدد جاذبہ کو سوزش ناک کردیتے ہیں۔ اس دوران کنکٹو ٹشوز کی خلط سوداء میں بھی تعفن پیدا ہونے لگتا ہے اور خنازیری زہر کے زیر اثر گلٹیاں رسولیاں بننے لگتی ہیں۔
اب مرض کنکٹو ٹشوز (ہڈیوں) سے جڑے عضلات میں نفوز کرنے لگتا ہے۔ عضلات کی خلط الدم جو حامل ریح ہے اس میں تعفن در آنے سے عضلات میں خیزش و سوزش ہونے لگتی ہے اور خلط الدم میں تعفن ہوکر بواسیری زہر کی پیدائش ہونے لگتی ہے۔
 قلب و عضلات کی سوزش رفع کرنے کیلیئے طبیعت مدبرہ بدن حرارت پیدا کرنے کے ماخذ جگر و غدد ناقلہ کو متحرک کرتی ہے۔ یاد رہے کہ متعفن اخلاط والا بلڈ جب جگر و غدد ناقلہ میں سرکولیٹ کرتا ہے تو ان کی متعلقہ خلط صفراء طبعی میں بھی زہریلے اثرات نفوذ کرجاتے ہیں۔ اور صفراء متعفن ہوکر سوزاکی زہر میں بدلنے لگتا ہے۔۔۔۔

اخلاط کے بگاڑ سے زہر بننے کا یہ عمل ایک سرکل میں چلتا ہے جو کہیں سے بھی شروع ہوسکتا ہے۔ اور طبیعت مدبرہ بدن کے زیر اثر وہیں ختم بھی ہوسکتا ہے۔ زہر کی پیدائش کا یہ عمل شروع وہیں سے ہوتا ہے جو خلط متعفن ہوجائے۔۔ پھر یہ تعفن اور زہر در زہر کا سلسلہ زندگی کے خاتمے یا شفاء تک چلتا رہتا ہے۔ یہ بلغم۔یا سوداء یا کسی بھی خلط سے سٹارٹ ہوسکتا ہے۔ مگر اس کے آگے بڑھنے کی ترتیب فطری موسموں کی ترتیب کے مطابق ہوتی ہے۔

زہروں کا علاج۔۔۔۔

آج کل علامات کے ساتھ ساتھ لیبارٹری ٹیسٹس کے زریعے ان زہروں  کی تشخیص بہت آسان ہوگئی ہے۔
زہروں کے اخراج و خاتمہ کیلیئے ہر مزاج کے ملین۔ مسہل اور تریاق نظریہ اربعہ میں ترتیب دیئے گئے ہیں۔

اصولی علاج بالامالہ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
جس خلط میں زہریلا مادہ بن رہا ہو اس کے متعلقہ عضو کی مشینی تحریک چلانے والی ملین و مسہل دواء سے زہریلی خلط کا اخراج کریں۔ کسی بھی عضو کی مشینی تحریک اس سے اگلے عضو کی مقوی بھی ہوتی ہے تو اس طرح مخدر عضو میں قوت بھی آنے لگتی ہے۔ 
ساتھ ہی اگلے مخدر عضو کی کیمیاوی تحریک کا تریاق دیں۔
اس دوران اگر معالج تحلیل و تسکین والے اعضاء میں جان لیوا کمزوری دیکھے تو علاج بالجذب و علاج بالضد کے تحت ان کی محرک ادویہ بھی دے سکتا ہے۔
مگر زہروں کا اخراج علاج بالآمالہ سے ہی مکمل ہوتا ہے۔ اس لیئے حتی الوسع یہی کوشش کریں کہ پہلے اصولی علاج بالآمالہ مکمل کریں اور مسکن و ضعیف اعضاء کو بعد میں قوت دی جائے۔۔۔۔۔